معلومات

ذہنی دباؤ کی نشانیاں

نیند کی زیادتی یا کمی: ذہنی دباؤ کی وجہ سے انسان کو نیند کے مسائل پیش آتے ہیں۔اس کی وجہ سے آپ کو نہ نیند آتی ہے اور نہ ہی آپ چین سے سو پاتے ہیں۔ دراصل ذہنی دباؤ کی ایک نشانی نیند نہ آنا ہے۔ موت اور خودکشی میں دلچسپی: ذہنی دباؤ کی وجہ سے خودکشی کا خدشہ بڑھ جاتا ہے۔اس کے باعث انسان کو اپنی زندگی میں کوئی دلچسپی نہیں رہتی اور وہ اپنی زندگی ختم کرنے کی کوشش کرتا ہے۔

کھانے سے پرہیز: چونکہ انسان مکمل مایوسی کا شکار ہو جاتا ہے اس لئے اُس کے کھانے کےطریقے پر بھی اُس کا اثر پڑتا ہے۔ اس کی وجہ سے انسان کھانا پینا کم یا بالکل ختم کر دیتا ہے۔ دلچسپی کھو دینا: ذہنی دباؤ کا انسان کے مزاج پر بھی بہت اثر پڑتا ہے۔اس کی وجہ سے انسان اپنے آپ کو ہر کسی سے دور رکھتا ہے اور کسی کام میں دلچسپی لینا پسند نہیں کرتا۔ ہمت ختم ہونا: ذہنی دباؤ کی وجہ سے انسان کی ہمت کم ہوتی جاتی ہے۔انسان ہر وقت تھکا تھکا محسوس کرتا ہے اور ایسا لگتا ہے کہ انسان کی ہمت جواب دے دیتی ہے۔

مزید پڑھیں: کریٹیکل تھنکنگ critical thinking کس چڑیا کا نام ہے؟

اداسی اور کمزوری: ذہنی دباؤ کے باعث انسان مایوسی اور اداسی کا شکار رہتا ہے۔انسان کوہر وقت کمزوری اور تھکاوٹ محسوس ہوتی رہتی ہے۔ رونا: ذہنی دباؤ انسان کو مایوسی اور ناامیدی کی گہرائیوں میں لے جاتا ہے۔جس کے باعث انسان چھوٹی چھوٹی باتوں پہ رونا شروع کر دیتا ہے۔ نا امیدی: چونکہ انسان ذہنی دباؤ کی وجہ سے بالکل ہمت ہار چُکا ہوتا ہے۔اس لئے اُسے ایسا لگتا ہے کہ اب وہ بالکل بے یارومددگار ہے اوروہ کسی سے امید لگانا چھوڑ دیتا ہے۔

توجہ اور فیصلہ کرنے میں دُشواری: انسان مایوسی کا اتنا شکار ہو جاتا ہے کہ وہ کسی بھی چیز پہ توجہ نہیں دے پاتا۔ اس کے باعث اسے فیصلہ کرنے میں بہت دُشواری پیش آتی ہے۔ بھوک اور وزن: ذہنی دباؤ مختلف شخصیات پر مختلف طریقے سے اثر انداز ہوتا ہے۔کچھ لوگوں کی اس کی وجہ سے بھوک اور وزن کم ہوجاتا ہے جبکہ اس کے برعکس کُچھ لوگوں کی بھوک اور وزن بڑھ جاتا ہے۔