ابھی کچھ لوگ باقی ہیں جو اُردو بول سکتے ہیں

ہدایات برائے تحریر

اردو صفحہ کے لئے کیسے لکھا جائے؟

ہمارے بہت سے قارئین یہ سوال کرتے ہیں کہ وہ “اردو صفحہ” کے لئے کیسے لکھیں اور لکھنے شرائط کیا ہیں۔ ہم نہایت اختصار کے ساتھ اس سوال کا شافی جواب دے دیتے ہیں۔

آپ کوئی بھی سماجی, معاشرتی, عالمی, مذہبی یا مزاحیہ کوئی بھی موضوع چنیں۔ قلم اٹھائیں اور 800 الفاظ سے 1200 الفاظ تک کی تحریر لکھیں اور ہمیں بھیج دیں۔ تاہم 800 سے کم الفاظ کی تحریر بھی بھیجی جا سکتی ہے۔

تحریر لکھتے وقت جن چند باتوں کا خیال رکھنا ہے وہ مندرجہ ذیل ہیں :

  • اپنی تحریر میں آپ کسی سے بھی مہذبانہ انداز میں اختلاف کر سکتے ہیں مگر یاد رہے کہ یہ حق اختلاف کرنے کا ہے,
    تذلیل کرنے کا نہیں۔
  • آپ کو پورا حق ہے اپنی رائے بیان کرنے کا مگر خیال رہے کہ اس حق کو استعمال کرتے ہوئے آپ کسی مذہبی, ثقافتی یا نسلی گروہ کی دل آزاری نہ کررہے ہوں۔ ہمیشہ شائستہ لہجے اور نرم الفاظ میں تحریر لکھیں۔
  • لعنتی, حرامی, حرافہ, بے غیرت اور نامراد ایسے القاب استعمال کرنے سے پرہیز کریں۔
  • لکھنے کا انداز دلچسپ ہو, ایسا نہ ہو کہ قاری آپ کے اندازِ تحریر سے بیزار ہو کر مکمل تحریر نہ پڑھے۔
  • آپ لکھی گئی تحریر کے مطابق اس کو عنوان بھی دیں، اور عنوان ایسا ہونا چاہیے جو تحریر کے موضوع سے مطابقت رکھتا ہو
  • املا کی غلطیاں نہ ہوں۔ اکثر اوقات ایسا ہوتا ہے کہ لکھنے کے شائق حضرات تحاریر لکھ تو لیتے ہیں مگر ان میں املا کی بے تحاشا غلطیاں ہوتی ہیں۔ آپ تحریر لکھیں اور پھر دوبارہ, سہ بارہ اس کی پروف ریڈنگ کر کے اس کو مکمل اور جامع کریں۔
    تحریر میں ربط ہو کیونکہ بے ربط تحریریں قارئین کے معیار پہ پورا نہیں اترتیں۔
  • کسی گروہ کے عقیدے, نظریے پہ کھلم کھلا اعتراض اور جرح نہ کریں کہ جس سے بہت لوگوں کو تکلیف اور دل آزاری ہو۔
    بازاری اور عامیانہ انداز اختیار کرنے سے پرہیز کریں کیونکہ ایسی تحاریر کو شائع نہیں کیا جائے گا۔
  • لکھتے وقت اردو کے قواعد و انشاء کا خاص خیال رکھیں۔ کومہ, سکتہ, واوین وغیرہ کا صحیح استعمال ہو۔ ان کا بے ڈھنگا استعمال تحریر کے حسن کو ختم کر دیتا ہے۔
  • اعراب لگانے سے پرہیز کریں۔
  • کسی بھی تحریر کو شائع, نہ شائع کرنے کا اختیار ادارتی کمیٹی کو حاصل ہے مزید برآں تحریر کی نوک پلک سنوارنے اور اس میں قطع برید کرنے کا حق مدیر کو حاصل ہے۔
  • اگر کوئی تحریر اشاعت کے معیار پہ پورا نہیں اترتی تو اس کو شائع نہ کرنے کا حق ادارے کو حاصل ہے اور اگر کوئی تحریر شائع ہو بھی جائے مگر وہ ادارتی معیار اور قارئین کے ذوق پہ پورا نہ اترے تو ادارہ اس کو حذف کرنے کا حق رکھتا ہے۔

مصنف اپنی تحریر کے لئے قلمی نام استعمال کر سکتا ہے مگر ادارے کے علم میں اس کی اصل شناخت ہونا ضروری ہے۔

اس لئے اپنی تحریر کے ہمراہ اپنا اصل نام مختصر تعارف اور تصویر لازماً بھیجیں۔ خواتین کو تصویر نہ بھیجنے کا استشنٰی حاصل ہے۔ گمنام مصنفین کی تحریریں شائع نہیں ہونگی۔

تحریر بھیجنے کے لئے ویب سائٹ پہ دیا گیا ای میل ایڈریس استعمال کریں۔
rabta@urdusafha.pk

مندرجہ بالا نگارشات کا خیال رکھتے ہوئے کسی بھی موضوع پہ تحریر لکھیں اور “اردو صفحہ” پہ بھیج دیں۔ آپ کی معیاری تحریر ضرور شائع ہو گی کیونکہ “اردو صفحہ” آپ ہی کی مرہونِ منت موجود ہے اور آپ ہی کے لئے ہے۔

شکریہ،
انتطامیہ اُردو صفحہ