معلومات

نظر بد اور نوسیبو ایفیکٹ

نوسیبو ایفیکٹ دراصل پلاسیبو ایفیکٹ کا الٹ ہے۔ یہ ایک ایسا طریقہ ہے جس میں مریض کو یہ باور کروایا جاتا ہے کہ بیان کردہ علاج سے اس کو بہتری نہیں ملے گی۔ نوسیبو ایفیکٹ پر اتنی ریسرچ نہیں ہو سکی جس کی بنیادی وجہ اس کے ساتھ جڑی تکلیف اور دیگر اخلاقی پہلو جس میں لوگوں کا زیادہ بیمار ہونا اور کوئی خاص طبعی فائدے نہ ہونا ہے۔ جب کسی مریض کو کمزور دوائی کا نسخہ یہ بتا کر دیا جاتا ہے کہ اس سے وہ بیمار ہوگا تو اس کے جسم میں ایک بائیولوجیکل ریسپانس شروع ہوتا ہے جو دراصل ان پر منفی بائیولوجیکل اثرات مرتب کرتا ہے۔ اگر کسی کو یہ بتایا جائے کہ انہیں اس تجربہ میں بہت تکلیف ہوگی تو درد پیدا کرنے والا نوسیبو ایفیکٹ ریسیور کے دماغ میں کولیسٹوکنن ایکٹو کرتا ہے اور ڈوپامائن کو ڈی ایکٹیویٹ کرتا ہے اور اینگزائٹی (HPA)کو بڑھاتا ہے. جبکہ درد دینے کا عمل اتنا تکلیف دہ نہیں ہوتا جتنا زیادہ درد ریسیور محسوس کرتا ہے یہ ریسپانس نہ صرف تکلیف اور پریشانی کو بڑھاتا ہے بلکہ نارمل اثرات کو بھی تکلیف دہ بناتا ہے۔

اس کی مثال اس بچے کی طرح ہے جو چلتے گر جاتا ہے اور اس کے والدین اگر اسے دیکھ کر نارمل رہتے ہیں تو خاموشی سے اٹھ کر نارمل رہتا ہے لیکن اگر والدین اس کے گرنے پر شور مچا کر زیادہ دلاسہ دیتے تو وہ پھوٹ کر رونا شروع کردیتا ہے۔ سائیکالوجسٹ کین کریگ نے تکلیف اور ماحول کے اثرات کا تجربات سے بہت عمدہ تعلق ظاہر کیا ہے جس میں لوگوں کے سامنے ایک مضبوط امیدوار کو بجلی کے تکیف دہ جھٹکے دئیے گئے اور باقی امیدواروں کو بتایا گیا کہ بجلی کے جھٹکے بہت کم تکلیف دہ ہیں اور مضبوط امیدوار نے درد کا احساس ظاہر نہیں کیا۔ جب دوسرے امید واروں کو اسی شدت کے جھٹکے دئیے گئے تو حیرت انگیز طور پر انہوں نے بھی تکلیف کے احساس کو بہت کم بتایا۔ پھر انھی تجربات کو الٹایا گیا اور کم جھٹکوں پر لوگ اچھلتے ہوئے پائے گئے۔

افریقہ سے لےکر نیو جنیوہ تک ،پوری دنیا میں بلکہ پوری انسانی تاریخ میں لوگوں کو یہ یقین رہا ہے ہمیں دوسرے لوگوں کے احساسات، جادو ٹونا وغیرہ ناصرف بیمار کرتے ہیں بلکہ انجری اور موت کا باعث بھی بنتے ہیں۔ایسے عقائد و نظریات عموماً جادوگری اور تعویز گنڈہ کے زمرے میں آتے ہیں۔ اور اسی سے ملتے جلتے نظریات جن میں دوسروں کے احساسات اور طلب کو مڈل ایسٹ سے چلی تک نظر بد کہا جاتا ہے۔ اس کی وجہ عموما بڑی سادہ ہے: لوگوں کا یہ ماننا ہے کہ جب کوئی شخص یا اشخاص ان کی کسی چیز کے بارے طلب یا تعریف کا اظہار کرتے ہیں تو ان کی صحت یا خوش بختی کو نظر لگ جاتی ہے یا نقصان پہنچتا ہے۔ اس ڈر سے لوگ اپنی کامیابیوں اور اثاثوں کو دوسروں سے چھپاتے ہیں اور اپنی خوبیوں کے اظہار سے کتراتے ہیں۔ بالاشبہ، یہاں پر ہم جو نوسیبو ایفیکٹ کے بارے جانتے ہیں اس کے اطلاق اور اپنی توہم پرستی کے زیر اثر لوگ درست رویہ اختیار کرتے ہیں۔ اگر وہ اپنی مہارت کو سامنے لائیں گے تو ان کو نظر لگے گی۔ نظر بد کو درست سمجھتے ہوئے تعویز گنڈے کے نظریات کے ساتھ جب انہیں لگتا ہے کہ انہیں نظر لگ گئی ہے تو ان کے جسم کے اندر ایک بائیولوجیکل ریسپانس آن ہوتا ہے جو ان کی تکلیف کو بڑھادیتا ہے یا حقیقت میں بیمار کردیتا ہے۔ اگر ہم اپنے نقصان ہونے کا مضبوط عقیدہ رکھتے ہیں اور مانتے ہیں کہ جادو اور نظر بد کا اثر ہوگا تو یہ احساس ہمارے جسم میں مادی ریسپانس پیدا کرتا ہے۔