ابھی کچھ لوگ باقی ہیں جو اُردو بول سکتے ہیں
براؤزنگ زمرہ

ادب

’’ہوچی منہہ کی لاش کے ساتھ مکالمہ‘‘ از مستنصر حسین تارڑ

نیم تاریک ہال کے درمیان میں شیشے کے صندوق میں ہوچی منہہ کی حنوط شدہ لاش پڑی تھی۔ اب بھی فوجی وردی میں ملبوس کہ ان امریکیوں کا کیا پتہ اور خاص طور پر ٹرمپ کا کیا پتہ کہ اسے یکدم یاد آ جائے کہ اوہو ان ویت نامیوں نے امریکہ کو سب سے بڑی شکست…
مزید پڑھ...

’’سرخ سلطنت ۔ایک ٹینک اور جَل پریاں‘‘ از مستنصر حسین تارڑ

ویت نام دریائے سرخ کی سرزمین تھی۔ یعنی سُرخ سلطنت کا دریا بھی سُرخ تھا۔ ہنوئی کے بہت ہی عالی شان ایئر پورٹ کے باہر سمیر کی سیاہ لینڈ کروزر کے اندر ہم دونوں کی آمد کے منتظر دو پیارے پیارے پانڈے لوٹ پوٹ ہو رہے تھے۔ یاشار اور طلحہ اپنے دادا…
مزید پڑھ...

ماں کے آٹھ جھوٹ (سوختہ جگروں کے لئے توشہ خاص)

ماں کے آٹھ جھوٹ میری ماں نے ہمیشہ حقیقت بیان کی ہو، ایسا بھی نہیں، آٹھ مرتبہ تو اس نے مجھ سے ضرور جھوٹ بولا، یہ قصّہ مِری ولادت سے شروع ہوتا ہے، میں اکلوتا بیٹا تھا اور غربت بہت تھی، اتنا کھانا نہیں ہوتا تھا جو ہم سب کو کافی ہو جائے،…
مزید پڑھ...

’’ویت نام‘ تیرے نام‘‘ از مستنصر حسین تارڑ

’’یہ زندگی صرف ایک پھول کو جھک کر دیکھنے‘ اس پر غور کرنے کے لیے ناکافی ہے اور یہ دنیا تو بہت بڑی ہے‘‘ زندگی ناکافی ہے‘ دیوسائی کے ایک پھول ایک بادل‘ ایک ریچھ کو دیکھنے کے لیے بھی‘ اس سے پیشتر مجھے کبھی احساس نہ ہوا تھا کہ یہ زندگی یہ دنیا…
مزید پڑھ...

نوجوانوں کے لئے پانچ مشورے از یاسر پیر زادہ

ڈاکٹر عادل نجم بھلے آدمی ہیں، ہمارے لڑکپن میں پی ٹی وی پر میزبانی کیا کرتے تھے، پھر ایک طویل عرصے کے لئے نہ جانے کہاں غائب ہو گئے، کئی برس بعد ایک دن اچانک پتہ چلا کہ لمز کے وی سی چُن لئے گئے ہیں، وہاں سے فراغت کے بعد ملک سے باہر چلے گئے،…
مزید پڑھ...

کراچی کی سواری

ایک دن میں کراچی کے جاپانی قونصل خانے کی لائبریری سے کچھ کتابیں لے رہا تھا کہ وہاں دوچاپانی لڑکے پہنچے اور قونصل خانے کے ملازم سے کراچی کے راستوں کا پتا پوچھنے لگے وہ سفر کے سادہ اور مضبوط کپڑے جینز اور بش شرٹ پہنے ہوئے تھے ان کی کمر پر…
مزید پڑھ...

سبع مُعلقات : عربی زبان کے شاہکار قصیدے

نسب پرستی،شمشیرزنی ،گھڑسواری، قبائلی رقابتیں اورجنگ وجدل کی طرح شعرگوئی بھی عربوں کی گھٹی میں پڑی تھی۔ ایک مشہور عربی مقولے (الشعر دیوان العرب) میں شعرکو عربوں کی زندگی کارجسٹرکہاگیاہے کیونکہ اشعار میں عر ب اپنی زندگی کے سبھی پہلووں کا…
مزید پڑھ...

’’خدائی مخلوق‘‘…اور اُس گھر میں جمائما کیسے رہتی تھی از مستنصرحسین تارڑ

یہ ان دنوں کے قصے ہیں جب عمران خان کا شوکت خانم ہسپتال زیر تعمیر تھا اور وہ دنیا بھر میں فنڈ ریزنگ ڈنر اور کانسرٹ کر رہا تھا۔ یہ حقیقت ہے کہ ایسے ڈنر بھی ہوئے جن میں خواتین نے اپنے زیور اتار کر عمران خان کی جانب اچھال دیے۔ اس مہم میں نہ صرف…
مزید پڑھ...

’’صبح کی نشریات میں مہمان، عمران خان‘‘ از مستنصرحسین تارڑ

دو ایسے مواقع ہوتے ہیں، جب ہمارے کالم نگار کھل کھیلتے ہیں، جوبن پر آ جاتے ہیں۔ ایک جب کوئی نامور ادیب یا کوئی اور مشہور ہستی دنیا سے رخصت ہوتی ہے تب چند آہیں بھرنے کے بعد آنکھ میں نہ آئی ہوئی نمی پونچھ کر یہ ثابت کرتے ہیں کہ وہ…
مزید پڑھ...

گھنگھرو ٹوٹ گئے

انڈیا کے اس ٹور میں لدھیانہ کے ایک مشاعرے میں بھی جانے کا اتفاق ہوا۔ لدھیانہ ساحر کا گھر ہے اور ساحرلدھیانوی خود بھی اس مشاعرے میں موجود تھا ۔ ساحر کے بچپن کے دوست اور نئے جاننے والے بھی اس مشاعرے میں موجود تھے۔ یہ حقیقت ہے کہ ساحر…
مزید پڑھ...