ابھی کچھ لوگ باقی ہیں جو اُردو بول سکتے ہیں
براؤزنگ زمرہ

افسانے

دو چہرے

میں حسبِ معمول آفس سے گھر آرہا تھا ‘ لاہور کی سڑکوں پر ہمیشہ کی طرح ٹریفک کا سیلاب رواں دواں تھا ‘ اناڑی ڈرائیوروں ‘ ڈپریشن ناکامیوں کے مارے شہریوں نے سڑک کو ہی میدانِ جنگ بنا رکھا تھا ہر کو ئی ایک دوسرے کو روندتے کچلتے آگے بڑھنے کی کو ششوں…
مزید پڑھ...

زوجین کے نام ایک خط

میری اچھی بہن اور میرے بھائی اگر آپ دونوں یہ یاد رکھیں کہ نکاح کا بندھن دو نفوس کو ایک نہیں کرتا بلکہ دو خاندانوں کو اور کبھی دو برادریوں، دو شہروں، دو ملکوں، دو فرقوں، یا دو مذاہب(اہل کتاب) کو بھی ایک ساتھ جوڑ دیتا ہے ۔ میاب بیوی نامحرم سے…
مزید پڑھ...

ٹائم کلر

جب اس کے والد اس سے کیاگیا وعدہ پورانہ کرسکے تو اس نے ٹائم کلر بن کرخودکوبربادکرنے کافیصلہ کرلیا۔وہ اپنے والدین کے لئے  سخت آزمائش بن گیا لیکن پھر اللہ رب العزت کی رحمت ہوئی ۔۔۔ فرخ اپنے والدین کا اکلوتا بیٹا تھا۔ اس کے والدین اس سے بہت…
مزید پڑھ...

سیفو: جو رنگ نہیں پہچانتا.

پکارنے والے اسے سیفو پکارتے تھے مگر اس کا اصل نام کسی کو بھی معلوم نہیں تھا کہ وہ کسی سے کم ہی بات کرتا تھا. اس کے دوستوں کی فہرست میں بھی کوئی تین سے چار نام ہی تھے. اپنی عمر کے دوسرے لڑکوں کی نسبت وہ ہر معاملے میں پیچھے رہ جاتا…
مزید پڑھ...

افسانہ "دستک ” از ماہ وش طالب

الخدر مسجد کے خاکستری میناروں سے صداۓاذاں بلند ہوتی دیرالبلٰح کی بستیوں تک گونجی تھی، جہاں چونے کے پتھر کے در و دیوار والے گھروں میں سے ایک گھر میں خوشی کاساماں دیدنی تھا، لہذا اہل مکیں پر دوہری نمازواجب ہوتی تھی، عبداللہ کوپروردگار…
مزید پڑھ...

کھول دو از سعادت حسن منٹو

امر تسر سے اسپيشل ٹرين دوپہر دو بجے کو چلي آٹھ گھنٹوں کے بعد مغل پورہ پہنچي، راستے ميں کئي آدمي مارے گئے، متعد زخمي اور کچھ ادھر ادھر بھٹک گئے۔ صبح دس بجے ۔۔۔۔کيمپ کي ٹھنڈي زمين پرجب سراج الدين نے آنکھيں کھوليں، اور اپنے چاروں طرف مردوں،…
مزید پڑھ...

نیا قانون از سعادت حسن منٹو

منگو(مرکزی کردار) کوچوان اپنے اڈے میں بہت عقلمند آدمی سمجھا جاتا تھا۔۔۔اسے دنیا بھر کی چیزوں کا علم تھا۔۔۔ استاد منگو نے اپنی ایک سواری سے اسپین میں جنگ چھڑ جانے کی اطلاع سنی تھی۔۔۔اسپین میں جنگ چھڑگئی اور جب ہر شخص کو اسکا پتہ چلا تو…
مزید پڑھ...

افسانہ اچھی لڑکی، بری لڑکی از: ڈاکٹر کوثر جمال

دراصل ایک لڑکی کو سب اچھا کہتے ہیں۔ اس لیے وہ اچھی ہے۔ دوسری لڑکی کو شاید ہی کوئِی اچھا کہتا ہو، اور کچھ لوگ تو اسے بُرا بھی کہتے ہیں ، اس لیے وہ بُری ہے۔ اچھی لڑکی اور بُری لڑکی ایک ہی دفتر میں کام کرتی ہیں۔ اس دفتر میں اور بہت سارے دفتروں…
مزید پڑھ...

ٹھنڈا گوشت از سعادت حسن منٹو

ایشر سنگھ جونہی ہوٹل کے کمرے میں داخل ہوا۔ کلونت کور پلنگ پر سے اٹھی۔ اپنی تیز تیز آنکھوں سے اس کی طرف گھور کے دیکھا اور دروازے کی چٹخنی بند کردی۔ رات کے بارہ بج چکے تھے، شہر کا مضافات ایک عجیب پراسرار خاموشی میں غرق تھا۔ کلونت کور پلنگ پر…
مزید پڑھ...

کالی شلوار از سعادت حسن منٹو

دہلی سے آنے سے پہلے وہ انبالہ چھانی میں تھی، جہاں کئی گورے اس کے گاہک تھے۔ ان گوروں سے ملنے جلنے کے باعث وہ انگریزی کے دس پندرہ جملے سیکھ گئی تھی۔ ان کو وہ عام گفتگو میں استعمال نہیں کرتی تھی لیکن جب وہ یہاں آئی اور اس کا کاروبار نہ چلا تو…
مزید پڑھ...