ابھی کچھ لوگ باقی ہیں جو اُردو بول سکتے ہیں
براؤزنگ زمرہ

کالمز

عاشقوں کے اس ہجوم میں

انسٹی ٹیوٹ ڈی موند عرب میری زندگی کے شاندار تجربات میں سے ایک تجربہ تھا‘ یہ ادارہ 1970ءکی دہائی میں 18 عرب ملکوں نے فرنچ گورنمنٹ کے ساتھ مل کر پیرس میں قائم کیا‘ سینٹ برنارڈ ایونیو پر 27 ہزار میٹر زمین خریدی گئی‘ دنیا کابہترین اسلامی سنٹر…
مزید پڑھ...

یہ ایک عالمی سازش کا آغاز ہے

کیا قادیانیوں کے متعلق حلف نامے میں تبدیلی اتنا سادہ سا معاملہ ہے، جیسے اربابِ حکومت بتا رہے ہیں. چند تویہ کہتے ہیں کہ یہ صرف ایک ٹائپسٹ کی غلطی ہے اوراس میں کسی سیاستدان سے لے کرمحمکہ قانون کے سیکشن آفیسرتک کسی کا کوئی دخل نہیں. شورمچا…
مزید پڑھ...

سکندر اعظم کون تھا

یہ وہ سوال ہے جس کا جواب دینا دنیا بھر کے مؤرخین پرفرض ہے‘ آج ’’ ایس ایم ایس‘‘ کا دور ہے‘ موبائل کا میسجنگ سسٹم چند سیکنڈ میں خیالات کو دنیا کے دوسرے کونے میں پہنچا دیتا ہے‘ جدید دور کی اس سہولت سے اب قارئین اور ناظرین بھی بھرپور فائدہ…
مزید پڑھ...

منی ٹریل

بنو تمیم قبیلے کی ایک شاخ 1740ءمیں نجد سے قطر آئی‘ یہ لوگ مختلف شہروں میں آباد ہوتے ہوتے انیسویں صدی میں دوہا آ گئے‘ قبیلے کے سردار محمد بن ثانی 1850ءمیں قطر کے حکمران بن گئے‘ ان کے صاحبزادے ثانی بن محمد بھی امیر بنے اور یہاں سے یہ قبیلہ…
مزید پڑھ...

سٹاک ایکسچینج

میں نے ایک دن جنید جمشید سے پوچھا ”مولوی صاحب آپ نے گانا کیوں چھوڑدیا تھا“ اس نے قہقہہ لگایا اور دیر تک ہنستا رہا‘ میں خاموشی سے اس کی طرف دیکھتا رہا‘ اس نے عینک اتاری‘ ٹشو سے آنکھیں صاف کیں اور ہنستے ہنستے جواب دیا ”یار تم نے مجھے جس انداز…
مزید پڑھ...

پاکستان بچے نہ بچے

آپ کو پاک بھارت تعلقات سمجھنے کےلئے دو ڈاکٹرین سمجھنا ہوں گے‘ یہ کولڈ سٹارٹ ڈاکٹرین اور اجیت دوول ڈاکٹرین ہیں۔ ہم پہلے کولڈ سٹارٹ ڈاکٹرین کی طرف آتے ہیں‘ آپ کو یاد ہو گا13 دسمبر 2001ءکو پانچ شدت پسندوں نے بھارت کی پارلیمنٹ پر حملہ کیا تھا‘…
مزید پڑھ...

شہبازشریف کا بدنما اوربیمارلاہور

فرانس کے شہرپیرس میں اقوام متحدہ کا ایک ذیلی ادارہ یونیسکوواقع ہے. یہ ادارہ دنیا بھرکے تقافتی ورثے کا امین سمجھا جاتا ہے۔ ادارہ ہرسال عالمی ورثے کی ایک فہرست شائع کرتا ہے. اس میں وہ تمام قدیم عمارات، کتب خانے، عجائب گھر، وغیرہ شامل ہوتے ہیں…
مزید پڑھ...

مان گئے آپ کو شرما جی

کہانی بس کے ایک سفر سے شروع ہوئی۔ بھارت کا ایک معمولی سرکاری ملازم وی پی شرما بس میں سوار تھا‘ وہ بھارتی ریاست مدھیہ پردیش کے ضلع سنگرالی کے گاؤں بدھیلا کا باسی تھا‘ وہ سنگرالی سے گاؤں جا رہا تھا‘ ساتھی مسافر کوئی میگزین پڑھ رہا تھا‘ شرما…
مزید پڑھ...

کلین پنجاب کمیشن

اسموگ کا آغاز لندن سے ہوا تھا‘ لوگ 5 دسمبر 1952ء کی صبح اٹھے توشہر گہرے سیاہ دھوئیں میں ڈوب چکا تھا‘ ہاتھ کو ہاتھ سجائی نہیں دے رہا تھا‘ حد نظر صفر ہو چکی تھی‘ گاڑیاں گاڑیوں کو نظر نہیں آ رہی تھیں‘ ٹرین ڈرائیور پٹڑی نہیں دیکھ پا رہے تھے‘…
مزید پڑھ...

وِلن سے محبت پیداکرنے والے

دنیا بھرمیں ڈرامہ، افسانہ، ناول کی ایک اپنی طویل داستان ہے. عمومی طورپرمحبت کی لازوال داستانوں سے ان اصناف کی روایت نے جنم لیا ہے. یہ داستانیں دنیا کے ہرمعاشرےمیں سینہ بہ سینہ لوگوں کومنتقل ہوتی رہی ہیں. مشرق کے معاشروں کا کمال یہ تھا کہ ان…
مزید پڑھ...