ابھی کچھ لوگ باقی ہیں جو اُردو بول سکتے ہیں

اداسی کے پیغمبر

میرا نام کامران اسماعیل ہے. تقریباً پینتالیس سال عمر ہے. پیدا پاکستان میں ہوا لیکن بچپن اور جوانی ساری امریکا میں گزری. ہمیشہ سے ہی نفسیات میں دلچسپی رہی. لہٰذا سائیکالوجی میں ہی ماسٹرز اور ڈاکٹریٹ کیا. پھر مزید دل کیا تو سائکو انالیسس یعنی…

نیک روحوں کا مسیحا

میں تمام نیک روحوں کا مربی اور سرپرست ہوں. میاں فرہاد مصطفیٰ کی روح کا، عائشہ بیگم کی روح کا اور تمھاری روح کا بھی زینب.’ اس کے چہرے پر بدستور وہ شفیق مسکراہٹ رقصاں تھی ۔میں ایک دفعہ تو کانپ ہی اٹھی‘آپ موت کا فرشتہ ہیں؟ روح قبض کرنے آتے ہیں…

محبّت، ضرورت اور بلھے شاہ

اس کی شادی ہوئے دس پندرہ دن گزر چکے تھے، لیکن میں اب بھی حقیقت سے سمجھوتہ نہیں کر پایا تھا. اور حقیقت یہ تھی کے ہماری محبّت اور وہ بےنام سا رشتہ، جس نے ہمیں تین سال تک جوڑے رکھا تھا، کب کا ختم ہو چکا تھا. وہ کسی اور کی ہو چکی تھی اور میں،…

خدا کی محبت اور ہیرا منڈی

مجھے یہ کہنے میں کوئی آر نہیں کے لڑکپن کے دور میں مجھے گناہ سے بہت لگاؤ تھا. نیکی مجھے بوجھ سی لگتی تھی. ایک بزرگ کی وجہ سے مسجد جانا شروع کیا. کچھ عرصہ پانچ وقت نماز باقاعدگی سے باجماعت پڑھی. شروع میں بہت مزا آیا. پھر سمجھ آیا کے مزہ خدا…

پنوں مراثی

تھکی ہوئی چیل نے اپنے پر سمیٹے اورگھونسلے کا رخ کرنے سے پہلے ڈوبتے سورج کی جانب آخری نظر ڈالی. اس کے پروں تلے پھیلتی تاریکی کی چادر بہت تیزی سے شہر ملتان کے سنہرے گنبد اورمٹیالے مینار نگل رہی تھی. سردیوں کی وہ گہری شام بہت اداس تھی اور اک…

شبانہ کھسرا

جب ہم چند اکیلے ویران لوگ شبانہ کو دفن کر رہے تھے تو اچانک بارش شروع ہو گیئ. نا بادل گرجے نا بجلی کڑکی، بس یک دم ہلکی ہلکی پھوار پڑنی شروع ہو گیئ. مجھے پتا بھی نہیں چلا کے کب بارش ختم ہوئی اور کب میری آنکھوں سے آنسو جاری ہوے. ہوش تب آیا جب…

کامران کی بارہ دری اور ریڈ انڈین حسینہ

وہ دسمبر کی ایک کالی برفیلی رات تھی، جب میں نے کامران کی بارہ دری کے سامنے ایک ریڈ انڈین حسینہ کو، بھڑکتی آگ کے الاؤ کے گرد ناچتے دیکھا. ذرا سوچئے، ہر طرف چھایا رات کا گھپ، کہرے سے ٹھٹرتا اندھیرا؛ راوی کے گدلے پانی پر ناچتے دھند کے گہرے…

شاعری، عشق اور بازار حسن

ابّا میاں! میری ناقص رائے میں، اچھا شاعر بننے کی دو اہم شرائط ہیں. پہلی شراب اور دوسرا طوائف سے عشق.’ بنے میاں نے سنہرے رنگ کے مشروب کی ایک چسکی لیتے اور نیم باز آنکھوں سے، مرزا عبدلودود کیطرف دیکھتے ہوئے، کمال دانشمندی سے عرض کیا بنے میاں…

فوجو چوہڑا اور مولوی عبدالغفور

مجھے اپنے محلے میں ہمیشہ سے، دو لوگ بہت پسند تھے. وہ تھے مولوی عبد الغفور اور فوجو چوہڑا. حیرت کی بات یہ تھی کے وہ دونوں ایک دوسرے کے نہایت گہرے دوست تھے اور ایک دوسرے سے بہت محبت کرتے تھے. اب آپ یقیناً سوچتے ہونگے کے کہاں ایک مومن مسلمان…

غبارے، دیوسائی اور بوڑھا میجر

دیوسائی کے برف پوش میدانوں میں شیوسر نامی ایک جھیل ہے. اس جھیل کے پاس، ایک اکیلے پہاڑ کی چوٹی پر، بدھ بھکشوؤں کی ایک قدیم اور ویران خانقاہ ہے. سنا ہے کے کچھ سال پہلے ایک ریٹائرڈ فوجی افسر دنیا سے تنگ آ کر وہاں جا کر بس گیا تھا. وہ شاید…