ابھی کچھ لوگ باقی ہیں جو اُردو بول سکتے ہیں

لبرل ازم اور ملحدیت – ایک جائزہ

لبرل ازم اور ملحدیت کے بکواس اور من گھڑت نظریات کا پرچار اگر اتنی اہمیت اور وقعت کا حامل ہوتا تو مذاہب کا وجود اب تک نابود ہوچکا ہوتا۔جو چیز انسان کو انسانیت سے جوڑتی ہے وہ مذہب ہے۔ رہ گئی بات دین باطل اور دین حق کی تفریق کی تو یہ ایک سیر…

ہابیل بنیں قابیل نہیں

آدم کو تخلیق کیا, اللہ نے فرشتوں کی جماعت سے سجدہ کروایا, شیطان نے انکار کیا اپنے سے کمتر مٹی گارے والی مخلوق کو سجدہ کرنے سے تو اسے تاقیامت اللہ کی رحمت سے بے دخل کردیا,آدم کو مشروط جنت بخشی کہ ساری جنت کے مالک ہو لیکن ذہن نشین رہے کہ فلاں…

دو جاسوس، دو آپ بیتیاں اور دو ردعمل۔۔۔ بلال شوکت آزاد

تقریباً 1949ء میں مشہور امریکی ادیب، جارج اورویل نے اپنے ایک مشہور زمانہ ناول ’’1984‘‘ میں جس عالمی آمرانہ و استبدانہ حکومت کا تصور پیش کیا تھا، دور حاضر میں امریکی حکمران طبقہ اسے شدومد سے اپنا چکا ہے۔بلکہ دن بہ دن امریکی حکمرانوں کی ہٹ…

ریاست ہائے جموں کشمیر – تاریخ, مسئلہ, حقیقت اور حل

کشمیر کی تاریخ 5000 ہزار سالا ہے ۔اس رو سے کشمیری 5000 ہزار سال پرانی قوم, نسل اور تہذیب ہے۔ہم قوم پرست نہیں وطن پرست ہیں۔ہمیں آزادی سے پیار ہے ہم غلام نہیں ۔کشمیر ایک الگ ملک ہے جو ریاست جموں وکشمیر اور گلگت بلتستان سے ملکر ایک اکائی پر…

قوم پرستی بمقابلہ ایمان, اتحاد اور تنظیم

وقت ایک بار پھر منطقی کروٹ لینے والا ہے اور برصغیر ستر سال قبل والی تاریخ پھر دہرانے کو ہے۔ بر صغیر کی تقسیم کا نامکمل ایجنڈا جیسے جیسے تکمیل کی جانب گامزن ہے اور بھارت مزید تقسیم کا جس طرح شکار ہورہا ہے یہ منظر اب بہت جلد وقت کے کروٹ لینے…

میں بھی انسان ہوں کوئی فرشتہ نہیں

ڈاکٹر شاہد نے جو نشاندہی کی وہ سچ ہے اور جن کا نام لیکر کہا ہے وہ بھی سچ ہے, لیکن قانون اور ہماری عدلیہ صرف سچ اور نشاندہی پر فیصلے نہیں کرتے, بلکہ جو بھی سچ بیان کیا جائے اس کا صیقل ثبوت لازم ہے ورنہ عدلیہ اور قانون کی تسلیمات نہیں ملیں گی…

نمبر ون کا راز ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ نمبر ون مجاہدین ۔ بلال شوکت آزادؔ

شام کا دھندلکا پھیل رہا تھا۔ ہر ذی روح اس وقت اپنے اپنے گھروندوں کو تھکا ہارا لوٹ رہا تھا۔ کسی کو کسی کی فکر نہیں تھی بس ایک ہی دھن سوار تھی کے کسی نا کسی طرح میں اپنوں میں پہنچ جاؤں اور ان میں آج کی خوشیاں بانٹوں۔ مگر اس کو اپنے ارد گرد…

تو کیا ہوا؟ فوج کس کام کی تنخواہ لیتی ہے؟۔بلال شوکت آزادؔ

سنودشمن کی توپیں گرج رہی ہیں۔ ۔ ۔ تو کیا ہوا؟ فوج کس کام کی تنخواہ لیتی ہے؟ سنو ملک دہشت گردی کی لپیٹ میں ہے۔ ۔ ۔ تو کیا ہوا؟ فوج کس کام کی تنخواہ لیتی ہے؟ سنو سیلاب آگیا ہے۔ ۔ ۔ تو کیا ہوا؟ فوج کس کام کی تنخواہ لیتی ہے؟ سنو طوفان آگیا ہے,…

اپنے کام کی تنخواہ اور صلاح الدین ایوبی —- بلال شوکت آزاد

صلاح الدین ایوبی کب آئے گا کب آئے گا کی گردان کرنے والوں سنو, صلاح الدین ایوبی اگر آج ہوتا تو کیا ہوتا؟ جب وہ دمشق سے نکل کر مصر قاہرہ پہنچتا تو دوسرے دن فیسبک پر یہ سٹیٹس ہوتے کہ موصوف اپنا کام دھندہ چھوڑ کر دوسروں کے معاملے میں ٹانگ اڑا…

پھر نہ کہنا بتایا نہیں، پتہ نہیں چلا۔۔۔ بلال شوکت آزاد

شنید ہے کہ مرحب شریف کے بہت سے دہائی ہے دہائی ہے والے پیغامات یہ چادر والی پھفے کٹنی افغانی اچک زئی وہاں مکمل رازداری سے پہنچا کر آیا ہے۔آنے والے دنوں میں اس غدار وطن اور مرحب شریف کی جانب سے اور ان کے دوستوں نریندر مودی اور نیتن یاہوکی…