بلاگ

ایک مذہب ایک کرنسی

دنیا بھر میں ایک مذہب لانے کاپلان 800 سال بعد معاہدہ طے پا گیا! یہودی تنظیموں اور ان کے پیروکاروں نے دنیا بھر میں ایک ہی مذہب اور کرنسی لانے کابھیانک منصوبہ شروع کر دیا۔ اسی منصوبے کی ایک کڑی پوپ فرانس کامشرق وسطیٰ کے خطے کا دورہ تھا جس میں انہوں نے جامعۃ الازہر کے امام کے ساتھ ابوظہبی میں ایک معاہدہ طے پایا جس کے مطابق خدا پر یقین رکھنےو الے جتنے بھی لوگ ہیں اب وہ اکٹھے ہو کر کام کریں گے۔ حضوراکرم ؐ کی ایک حدیث ہے جس کے مطابق قیامت اس وقت تک قائم نہیں ہو گی یہاں تک کہ ایک شخص قبرستان میں سے گزرے گا اور تمنا کرے گا کہ کاش میں اس قبر میں ہوتا۔ وہ اپنے مذہب کی وجہ سے اس کی تمنانہیں کرے گا بلکہ جو فتنے دن بدن اس کو گھیر لیں گے ان سے تنگ ا ٓکر وہ ایسا کہے گا۔

حضوراکرم ؐ نے یہ بھی فرمایا کہ دور آخر میں فتنے تمہارے گھروں میں اس طرح داخل ہوں گے جس طرح بارش کے قطرے۔ پوپ فرانسس نے 2016 میں ایک ویڈیو پیغام جاری کیا تھا اور اس میں کہا تھا کہ اب تمام مذاہب کو ایک ہو جانا چاہیے۔ اور مل کر رہنا چاہیے اور اس میں مسلمان مسیحی ،یہودی اور تمام مذاہب کے لوگوں کوایک دکھایا گیا تھا۔ حضور اکرم ؐ نے کہا تھا کہ دجال کا لفظ دجل سے نکلا ہے جس کا مطلب ہے دھوکا، یہ آپ کو دکھائے گا اور لیکن اسے کے پیچھے اس کا مقصد اور ہو گا۔ پوپ فرانسس کامتحدہ عرب امارات کا دورہ کسی بھی پوپ کااس خطے میں 800 سال بعد پہلا دورہ ہے۔ اور اس دورے میں ایک معاہدہ طے پایا ہے اور اس تحریرمیں جو الفاظ ہیں ان کے ڈبل مطلب نکلتے ہیں جو ان لوگوں نے بہت مہارت سے تیار کیے ہیں۔ اس میں کہا گیا ہے کہ یہ تمام مذاہب خدا کی طرف سے ہیں اور اسی نے بنائے ہیں اب ہمیں زبردستی کسی سے کچھ نہیں کروانا چاہیے اور اب ہر کسی کو آزادی ہونی چاہیے وہ جو کچھ مرضی کرے۔ کھلم کھلا کرے سب کا حق ہے اور اب بہت بڑی دستاویز تیار کی گئی ہے۔